87

پی ٹی آئی ریاض ریجن کے زیر اہتمام ڈاکٹر علامہ محمد اقبال ڈے کی تقریب کا انعقاد

پی ٹی آئی ریاض ریجن کے زیر اہتمام ڈاکٹر علامہ محمد اقبال ڈے کی تقریب منعقد کی گئی اس تقریب میں پورے ریاض سے پی ٹی آئی کے ورکروں نے شرکت کی تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا نظامت کے فرائض گل زیب اور شفی خان نے ادا کیے تقریب کا استقبالیہ ڈاکٹر سلمان شاہد نے دیا اور انہوں نے آئے ہوئے تمام معزز مہمانوں کو خوش آمدید کہا تقریب میں پروفیشن فورم کے سابقہ صدر ڈاکٹر احمد ندیم بھٹی کا کہنا تھا کہ ہمیں علامہ محمد اقبال کے افکار کو اپنانا چاہیے ان کا مزید کہنا تھا کہ اقبال نے جن شاہین کا ذکر کیا وہ یہی شاہین ہیں جو اس وقت پی ٹی آئی کی صفوں میں بیٹھے ہیں تقریب میں ریاض کے سابقہ صدر بخت شیر کا کہنا تھا نے ہمیں علامہ محمد اقبال کی زندگی کو اپنانا چاہیے اور ان کی زندگی سے ہمیں بہت کچھ سیکھنا چاہیے اس تقریب میں خطاب کرتے ہوئے شاکر اللہ شاکر کا کہنا تھا کہ آج ہم جس مقصد کے لیے اکٹھے ہوئے ہیں وہ شاعر مشرق علامہ محمد اقبال ہے میں ان کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں تقریب میں خطاب کرتے ہوئے لیاقت علی خان کا کہنا تھا کہ ہمیں ڈاکٹر علامہ محمد اقبال کے ویژن کو آگے لے کے جانا چاہیے اس تقریب میں ریاض شہر کے معروف سنگر معنی چوہان ملی نغمے گا کر لوگوں کو جھومنے پر مجبور کردیا اس تقریب میں عبدالحکیم خان کا کہنا تھا پاکستان ہے تو ہم ہیں آج کا دن ہم لوگ جو منا رہے ہیں وہ شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کی یاد میں ہے میں ان کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں ہو تقریب میں معروف میڈیا پرسن اور معروف شاعر کامران ملک نے اپنا کلام پڑھ کر خوب داد لی اس تقریب میں پی ٹی آئی وومن ونگ کی سابقہ جنرل سیکرٹری مس غوثیہ جیسم نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہمیں علامہ محمد اقبال کی زندگی کو اپنانا چاہیے ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم عمران خان کے وژن کے ساتھ کھڑے ہیں اور وہ دن دور نہیں جب آپ کو نیا پاکستان نظر آئے گا تقریب کے آخر میں ریاض ریجن کے سابقہ صدر عبدالقیوم خان کا کہنا تھا میں اپنے آئے ہوئے تمام ورکروں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں آپ سب لوگ میری کال پے تشریف لائے عمران خان کا وہ چھوٹا سا سپاہی ہوں اور آج ہم جس عظیم ہستی کے لیے اکٹھے ہوئے ہیں ڈاکٹر علامہ محمد اقبال ہے ان کی زندگی سے انسان بہت کچھ سیکھ سکتا ہے ڈاکٹر علامہ محمد اقبال کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں اپنے تمام بھائیوں سے کہتا ہوں کہ یہ وقت ہے ہمیں اپنی صفوں میں اتحاد رکھنا پڑے گا اور عمران خان کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑا ہونا پڑے گا تقریب کے آخر میں قومی ترانہ پیش کیا گیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں