170

پاکستانی کمیونٹی ٹوسٹ ماسٹرز کلب کی جانب سے ۸ نومبر کو یوتھ لیڈرز شپ پروگرام کافائنل تقریری مقابلہ

الخبر-رپورٹ –جویریہ اسد-پاکستانی کمیونٹی ٹوسٹ ماسٹرز کلب کی جانب سے ۸ نومبر کو یوتھ لیڈرز شپ پروگرام کافائنل تقریری مقابلہ منعقد کیا گیا۔یہ پروگرام آٹھ نشستوں پر مشتمل تھا جن کا مقصد بچوں میں تقریر نویسی كو فروغ دینا اور ان میں خود اعتمادی پیدا کرنا تھا تاکہ مستقبل میں وہ اپنی قائدانہ صلاحیتوں كو اجاگر کر سکیں۔ اس پروگرام کو کلب كے صدرڈی -ٹی۔ایم عمر فاروق ملک اور كوآرڈینیٹر کہکششاں شرجیل نے بہت محنت كے ساتھ ترتیب دیا۔ ہر نشست میں بچوں كو ان کے مینٹرز نےاپنے تجربے کی روشنی میں تربیت دی اور بطور مقرر ان کی صلاحیتوں کو نکھارا تاکہ ان کی خود اعتمادی کو تقویت ملے۔ فائنل مقابلےمیں تمام یوتھ لیڈرزنےبہت جوش اور جذبے سے حصہ لیا ۔مینٹرز میں سینیرز ٹوسٹ ماسٹرز ایریا ڈائریکٹر قدسیہ ندیم لالی، ڈی ٹی ایم عمر فاروق ملک ، ڈی ٹی ایم محمداظہر فاروق ،ٹی ایم وحید اسلم، ٹی ایم فیصل چوھدری، ٹی ایم لہنا فراز اور ٹی ایم عزیر اقبال شامل تھے۔ فائنل مقابلےكی نظامت ڈی ٹی ایم محمداظہر فاروق نے اپنے مخصوص انداز میں کی اور چیف ججز كا حاضرین سے تعارف کرایا جن کو غیرجانبدارنتائج کے حصول کےلیے مدعو کیا گیا تھا۔ اپنے خطاب میں کلب کے صدر عمرفاروق ملک نےکہا كے یوتھ لیڈرز کا سفر بہت شاندار رہا اور ان کےانداز تقریر میں پہلی نشست سے اور آج تک ایک نمایاں تبدیلی ہے۔ یوتھ لیڈرز کو ان کی عمروں کے مطابق دو گروپس میں تقسیم کیا گیا تھا اور مقابلہ برجستہ موضوعات اور پہلےسے تیارشدہ تقاریر پر مشتمل تھا۔گروپ اے میں یوتھ لیڈرز ،حمزہ ابرار،سفیان بن سلمان ،علی بصیر اعون اور حمزہ احسن جبکہ گروپ بی میں جویریہ اظہر،حسن احسن،ماورہ شرجیل اور ذرمینہ بصیر اعوان فاتح قرار پاۓ- تمام یوتھ لیڈرزکی حوصلہ افزائ کے لیے انکو اعزازی سرٹیفکیٹ اور شیلڈزسے نوازا گیا۔ یوتھ لیڈر ز کے والدین نے اس کاوش کو سراہا اور مستقبل میں بھی اس تعمیری سلسلے کو جاری رکھنے پر زور دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں