137

گوجرخان (عامر وزیر ملک) گوجرخان جی ٹی روڈ پر انتظامیہ کی آشیرباد سے سجنے والا ریڑھی بازار جرائم پیشہ افراد کا اڈہ بن گیا.

گوجرخان (عامر وزیر ملک) گوجرخان جی ٹی روڈ پر انتظامیہ کی آشیرباد سے سجنے والا ریڑھی بازار جرائم پیشہ افراد کا اڈہ بن گیا.

چند دنوں میں دس سے زائد افراد کے پرس اور قیمتی سامان چوری کر لیا گیا. لٹنے والوں میں خواتین بھی شامل. پرس چوری اور سامان غائب کرنے والے نوعمر افغانی لڑکے ہیں متاثر ہ افراد کا الزام. تفصیلات کے مطابق جی ٹی روڈ چوک پر درجنوں ہتھ ریڑھی والوں نے عملاً قبضہ کر کے مستقل ریڑھی بازار بنا لیا ہے. ان کے نزدیک ہی سڑک پر گاڑی پارک کر کے اکثر لوگ شاپنگ کے لیے بازار کا رخ کرتے ہیں جس گاڑی میں پیچھے اکیلی عورت یا بوڑھا آدمی ہو تو یہ لڑکے اس گاڑی کے ارد گرد ہو کر اس میں موجود شخص کو باتوں میں الجھا کر پرس قیمتی سامان اٹھا کر فرار ہو جاتے ہیں متاثر ہ آدمی تعاقب کی نیت سے فوری گاڑی سے باہر نکلتا ہے تو ریڑھی پر فروٹ لگانے والے سارے افغانی لڑکے کیا ہوا کیا ہوا کہتے ہوئے متاثرہ کو روک لیتے ہیں اور واردات کرنے والے اطمینان سے فرار ہو جاتے ہیں. جمعرات کے دن بھی اسی جگہ پر تین وارداتیں ہوئی ہیں جن میں دو خواتین شامل ہیں جن کے پرس میں ہزاروں روپے کی نقدی اور زیورات تھے چھین لئے گیے مسلسل وارداتوں پر انجمن تاجراں گوجرخان کے رہنماؤں نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ اور موٹر وے پولیس کی نااہلی کے باعث جی ٹی روڈ پر یہ ریڑھی بازار سیکورٹی رسک بن گیا ہے انتظامیہ یہ جگہ کلیر کرا کے ان ریڑھی والوں کو متبادل جگہ فراہم کرے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں