92

ریاست مدینہ میں مدینہ والے حکم کو منسوخ کیسے کیا جا سکتا ہے مفتی تقی عثمانی

مفتی تقی عثمانی صاحب نے خیبر پختونخوا میں عبایا کو لازمی قرار دیے جانے کا حکم نامہ منسوخ کرنے پر وزیراعظم عمران خان سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

دو روز قبل ڈسٹرکٹ ایجوکیش آفیسر فی میل پشاور نے ایک سرکلر جاری کیا تھا جس میں ضلع ہری پور میں اسکول کی طالبات کے لیے عبایا یا چادر لینے کو لازمی قرار دیا گیا تھا۔

بعدازاں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے ایکشن لیتے ہوئے سیکریٹری ایجوکیشن کو نوٹی فکیشن منسوخ کرنے کی ہدایت کی جس کے بعد اسے منسوخ کردیا گیا۔
اس حوالے سے مفتی تقی عثمانی صاحب نے سوشل میڈیا ٹوئٹر بیان میں وزیراعظم عمران خان سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ٹوئٹر پر جاری بیان میں مفتی تقی عثمانی صاحب نے کہا کہ ’ہری پور اور پشاور میں طالبات کو عبایا پہننے کی تاکید قرآن کریم کے عین مطابق تھی اور مبارکباد کی مستحق، لیکن افسوس کہ خیبرپختونخوا کی حکومت نے فوراً اس نوٹی فکیشن کو منسوخ کردیا‘۔

انہوں نے کہا کہ ’اس وقت خاتون اوّل بھی پردہ نشین ہیں اور ان کے شوہر (وزیراعظم) ریاست مدینہ کے داعی کیا وہ اس حرکت کا نوٹس نہیں لیں گے؟

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں