79

راولپنڈی DHQ ہسپتال دہرے قتل کیس کے ملزمان کے گھر پر چھاپے۔

راولپنڈی DHQ ہسپتال دہرے قتل کیس کے ملزمان کے گھر پر چھاپے۔

سٹی پولیس آفیسر راولپنڈی محمد فیصل رانا نے ملزمان کی گرفتاری کے لیے پولیس کو 24 گھنٹے کا ٹاسک دیا تھا۔

پولیس نے جدید سائنسی طریقہ تفتیش سے ملزمان کے بارے میں معلومات حاصل کی ۔

ملزمان کی گوجرخان کے علاقے میں خفیہ اطلاع پر ایس پی صدر ڈویژن رائے مظہر اقبال اور ایس ایچ او گوجرخان اورنگزیب کی سربراہی میں پولیس نے ریڈ کیا۔

جس پر ملزم کی طرف سے پولیس ریڈنگ پارٹی پر فائرنگ کی گئی۔

گوجرخان پولیس نے بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے تحسین طارق کے والد محمدطارق کو گرفتار کرلیا۔

ملزم محمد طارق کے خلاف تھانہ کلرسیداں میں اقدام قتل مقدمہ کا درج ہے۔ جب کا بیٹا تحسین طارق دہرے قتل کیس کا مرکزی ملزم ہے ۔

ملزم محمد طارق نے گزشتہ روز تھانہ کلرسیداں میں مقتول لہراسب اور اس کی ہمیشرہ رضیہ کو قتل کرنے کی نیت سے فائرنگ کی تھی ۔

جس کے بعد دونوں مضروب لہراسب اور رضیہ DHQ ہسپتال راولپنڈی میں زیر علاج تھے ۔

جبکہ ملزم تحسین طارق (پولیس کنسٹیبل) نے اپنے والد کی ایما پر ایمرجنسی وارڈ میں داخل ہوکر مضروب لہراسب خان اور اس کے بیٹے نوید کو یا اسلحہ آتشیں قتل کر دیا ۔

ملزمان کے خلاف تھانہ گنج منڈی میں قتل ودیگر دفعات کے تحت مقدمات درج کیا گیا۔

پولیس کی دہرے قتل کیس کےمرکزی ملزم تحسین طارق کی گرفتاری کے لئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئیں ہیں۔

ملزم تحسین طارق کو بھی جلد از جلد گرفتار کرکےقانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا ۔

قانون کی بالادستی اور مظلوم کی داد رسی راولپنڈی پولیس کا نصب العین ہے۔

کوئی بھی شخص قانون سے بالاتر نہیں۔قانون کی حکمرانی کو ہر صورت یقینی بنایا جائے گا ۔

سی پی او راولپنڈی ڈی آئی جی محمدفیصل رانا نے صدر ڈویژن پولیس کو ملزم کی گرفتاری پر شاباش دی۔

پولیس کی ملزم سے مزید انٹروگیشن جاری ہے۔مدعیان مقدمہ کو تفتیش کے ہر پہلو سے باور رکھا جائے گا۔

ترجمان راولپنڈی پولیس

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں