19

چین کی بڑھتی عمر کی آبادی معیشت کیلئے سونے کی طرح اہم

(خصوصی رپورٹ):۔ چین کے شمال مشرقی صوبے شانکسی میں پر فضا شہر شیان میں شانکسی ٹریول سروس کمپنی کے مینجرژاؤ جنکن رواں ماہ چین میں موسمِ بہار اور نئے سال کی آمد کے حوالے سے سالانہ چھٹیوں کے اختتام کے باوجود ان دنوں اپنی ٹریول کمپنی کی جانب سے چین کے بوڑھے لوگوں کے لیے جاری ٹریول پیکجز کے حوالے سے بکنگ میں مصروفِ عمل ہیں، اس حوالے سے ژاؤ نے کہا کہ چین میں گزشتہ چند سالوں نے چین کی بڑھتی عمر کے لوگوں کیلئے خصوصی طور پر ٹریول پیکجز کا علان کیا جا رہا ہے جس سے نہ صرف ٹریولنگ کے شعبے بلکہ دیگر متعلقہ متصل شعبوں بشمول ہوٹلنگ اور فوڈ کو تیزی سے ایک نیا رجحان حاصل ہوا ہے، ژاؤ نے کہا کہ چین میں بوڑھے لوگوں کی دیکھ بھال اور بوڑھے لوگوں کے حوالے سے اسپیشل سیاحتی پیکجز تیزی سے مقبول ہو رہے ہیں، ژاؤ نے کہا کہ انکی ٹریولنگ کمپنی موسمِ سرما میں ملک کے جنوبی علاقوں کے بوڑھے لوگوں کیلئے خصوصی اسپیشل سینئر پیکجز کا اعلان کرتی ہے، جبکہ ملک کے شمال مشرقی علاقوں کے بڑی عمر کے لوگوں کے لیے موسمِ گرما میں سینئر پیکجز کا اعلان باقاعدگی سے کیا جا رہا ہے جو تیزی سے عوام میں مقبول ہو رہے ہیں۔ سینئر پیکجز کے حوالے سے ژاؤ نے کہا کہ بیشتر سینئر سٹیزن ہوائی جہاز کے سفر سے گریز کرتے ہیں اس لیے انکی کمپنی سینئر پیکجز میں بسا اوقات ریلوے کو چارٹر کرتی ہیں۔ اور سئنیر پیکجز کے تحت ٹرین کو سلیپر بوگیز میں تبدیل کر کے چارٹرڈ کیا جاتا ہے تاکہ سینئر سٹیزنز کو کسی قسم کی سفری مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے اور ان چارٹرڈ ٹرینز میں میڈیکل کی سہولیات کو ہر طرح سے پیشہ ورانہ پیرا میڈیکس کی مدد سے پورا کیا جاتا ہے۔ اس طرح سے یہ ایک امر ہے جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ چینی کی بڑھتی عمر کی آبادی چین میں کیسے معیشت کو تقویت پہنچانے اور بیشتر بزنسز چین کی بڑھتی عمر کے لوگوں کی ممکنہ ضروریات کے پیشِ نظر تیزی سے فروغ پا رہے ہیں۔ اس حوالے سے پیکنگ یونین میڈیکل کالج اورچاینئز ایجنگ ویل ایسوسی ایشن کیجانب سے پیش کی گئی ایک مشترکہ رپورٹ میں کیا گیا ہے کہ 2025سے 2050کے مابین چین کی 80سال کی آبادی میں تیزی سے اضافہ ممکنہ طور پر ریکارڈ کیا جائے گا۔ اسی طرح سے chyxx.comکی جانب سے جو کہ ملک میں صنعتی امعلومات کے حوالے سے بہت اہمیت رکھتا ہے اس کی جانب سے جاری ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 2025تک چین کی سینئر سٹیزن آبادی 300ملین تک پہنچ جائیگی۔ اس حوالے سے چین دنیا کی ان چند ممالک کی فہرست میں شامل ہوگا جہاں پر سلور انڈسٹری تیزی سے فروغ پا سکتی ہے کیونکہ ممکنہ بڑی عمر کی آبادی کے لیے کھپت کی مارکیٹ2050تک 15.5ٹریلین ڈالر کے مجموعی حجم تک پہنچ جائیگی جس کی مالیت2014میں محض چار ٹریلین ڈالر تک محدود تھی۔ رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ چین کی بڑھتی آبادی کے سینئر سٹیزن کا 96فیصد حصہ نرسنگ ہومز میں رہنے کی نسبت گھروں میں رہنے کو ترجیع دیتے ہیں ، اس ضمن میں بیجنگ کی ایک انجیرنگ فرم انکسنِ پنشن نے حالیہ چند سالوں میں سینئر سٹیزنسروسز کے شعبے میں خاصا منافع کمایا ہے ، یہ کنسٹرکشن انجینرنگ کمپنی بڑی عمر کے لوگوں کو سہولیات فراہم کرنے کے حوالے سے انکے گھروں میں انکی ضروریات کے پیشِ نظر مناسب تبدیلی کر کے دیتے ہیں تاکہ وہ بڑی عمر کے لوگ اپنے گھروں میں رہتے ہوئے کسی بھی حادثے سے بچ سکٰں۔ اس ضمن میں سیڑھیوں کے کنارے ریلنگ تعمیر کر کے دی جاتی ہے سلیپری فرش کو ان بوڑھے لوگوں کے حوالے سے درست کیا جاتا ہے۔ اس حوالے سے جاری سروسز سے مستفعید ایک بوڑھی خاتون سرنامید لؤ کا کہنا ہے کہ جب سے انکسن پینشن کے اسٹاف نے انکے گھر کے سلیپری فرش کو درست کیا ہے وہ کبھی بھی اس فرش سے نہیں گریِ ہیں، انکسن پنشن بوڑھے لوگوں کے جسمانی مسائل کو دیکھتے ہوئے انکے گھروں کی اورہالنگ کرتے ہیں اور گھروں کی تعمیر کے حوالے سے ضروری تبدیلیوں اورمختلف سروسز کا انتخاب کرتے ہیں اس حوالے سے اس کمپنی کے ٹیم ہیڈ کانگ ایؤ کا کہنا ہے کہ بوڑھے لوگوں کے لیے گھروں کی مناسب تبدیلیاں احتیاطی تبدیلیوں کو مدِ نظر رکھ کر کیا جاتا ہے۔ ایسے بوڑھے لوگ جو جسمانی عوارض کا شکار ہوں یا انہیں مناسب دیکھ بھال کی ضرورت ہو اس حوالے سے انکے گھروں میں مناسب آرائش اور سہولیات یقینی بنائی جاتی ہیں تاکہ وہ لوگ با آسانی اپنی روزانہ کی ایکٹیوٹیز کو خود سے سر انجام دے سکیں ۔ اس طرح سے گزشتہ دو سال میں صرف بیجنگ شہر میں 1800گھروں میں انکسن پنشن کمپہنی نے ضروری بحالی کام کو سر انجام دیا ہے۔ اس حوالے سے بیجنگ سولِ افیئرز کی رپورٹ کے مطابق شہری حکومت کی جانب سے 2016میں ایسے خاندانوں کے لیئے جو مالیاتی مسائل کو شکار ہوں انکے لیے ایک ری ماڈلنگ پراجیکٹ کا آغاز کیا ہے جس کے تحت 2017تک4675گھروں کو بوڑھے افراد کی ضروریات کے مطابق تبدیل کیا گیا اور اس پراجیکٹ کو جلد سوشل ویلفیئرنظام کا حصہ بنا دیا جائیگا۔۔۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں