18

کوئلے کی پیداوار کے حوالے سے مشہور چین کا شانکسی صوبہ گرین ڈیویلپمنٹ کا مرکز

(خصوصی رپورٹ):۔ چین میں تعین جرمن سفارتکارکلیمنس وؤن گوئٹس نے گزشتہ دنوں چینی وزارتِ خارجہ کی جانب سے شمالی چین کے صوبے شانکسی کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چین کے شانکسی صوبے کے حوالے سے جس امر نے انہیں سب سے زیادہ متاثر کیا ہے وہ یہ ہے کہ شانکسی صوبہ چین بھر میں کوئلے کی بہتات اور لا متناہی پیداوار کے حوالے سے بہت مشہور تھا اس صوبے میں جنگلات کی شرح بمشکل ایک فیصد تھی لیکن آج اسی شانکسی صوبے کی زمین 50فیصد تک جنگلات سے ڈھکی ہوئی ہے۔شانکسی صوبے کی گرین ڈیویلپمینٹ کے حوالے سے چین کی وزارتِ خارجہ کی جانب سے گزشتہ ماہ 25 فروری کو شانکسی میں بعنواں: چین ایک نئے عہد میں ۔ایک مشترکہ مستقبل کے حوالے سے شانکسی میں تبدیلیاں، اس تقریب میں چین میں متعین دنیا بھر کے130سے زائد ممالک کے 500سفراء نے شرکت کی اس کے علاوہ بین الاقوامی آرگنائزیشنز کے مندوبین، بزنس کمیونیٹز کے عہدیداروں اور صحافیوں کو بھی خصوصی طور پر مدعو کیا گیا۔ چینی صوبے شانکسی میں کوئلے کے زخائر کے حوالے سے معلومات فراہم کرتے ہوئے چین کے اسٹیٹ کونسلر اور وزیر برائے خارجہ اموروانگ ائی نے تقریب کے شرکاء کو بتایا کہ گزشتہ ستر سال سے شانکسی صوبے سے نکالے گئے کوئلے نے چین کے ہر الیکٹرک لیمپ کو روشن کیے رکھا ہے، اس کے علاوہ گزشتہ ستر سال میں جدید چین کے صنعتی نظام کو شانکسی صوبے سے نکالے گئے کوئلے کی مدد سے ہی توانائی فراہم کی جا تی رہی ہے، وانگ ائی نے مزید واضح کیا کہ کیمونسٹ پارٹی آف چائینہ کے 18ویں اجلاس کے بعد سے چین توانائی کے استعمال کے حوالے سے اور ملک میں گرین ڈیویلپمینٹ کے حوالے سے عظیم تبدیلیوں سے گزرا ہے، چین کو ستر سال تک اپنے کوئلے سے روشن رکھنا والا شانکسی صوبہ آج ملک میں گرین معیشت اور گرین ڈیویلپمینٹ کے حوالے سے ایک کلیدی کردار ادا کر رہا ہے، چین میں گرین معیشت اور گرین ڈیویلپمینٹ کے حوالے سے شانکسی چین کا واحد صوبہ ہے جو موثر انداز میں قومی جامع اصلاحات پالیسز پر عمل درامد کے حوالے سے ایک مرکز کی حیثیت اختیار کر چکا ہے، اور شانکسی صوبے کو وسائل پر مبنی معیشت میں یکسر تبدئل کرنے کے حوالے سے جامع منصوبہ بندی پر عمل درامد کروایا گیا ہے، اس حوالے سے شانکسی صوبے ماحولیاتی تحفظ کو یقینی بنانے کے حوالے سے مرحلہ وار انداز میں تمام امور کو یقینی بنائے ہوئے ہے، شانکسی صوبے میں آلودگی پر مکمل کنٹرول کے لیے ماحول دوست نقل وحمل کے زرایع عوامی سطع پر بہت مقبولیت رکھتے ہیں اور لوگوں کی روزمرہ ضروریات کے حوالے سے یہ ماحول دوست زرایع ابلاغ انکی زندگی کا ایک لازمی جزو بن چکے ہیں۔ شانکسی کے دارلحکومت تائیوآن ملک کا واحد شہر ہے جہاں پر عوامی سفری سہولیات کے حوالے سے بلیڈ الیکٹرک گاڑیاں استعمال کی جاتی ہیں جو سرسبز ماحول کے حوالے سے بہت حد تک ماحول دوست گاڑیاں ہیں۔ گزشتہ تین سالوں میں اس صوبے سے88.41ملین ٹن کوئلے کی انتہائی بہتات کو کامیابی سے مرحلہ وار انداز میں کم کیا گیا ہے اس طرح سے کوئلے کی نئی استطاعت کو 57فیصد تک محدود رکھا گیا اور استعمال کے حوالے سے دنیا بھر کے مقابلے میں کوئلے کے استعمال سے نکلنے والے زہریلے دھویں کی شرح دنیا بھر سے کم ہے جس پر گرین ڈیویلپمینٹ کے حوالے سے مکمل کنٹرول رکھا گیا ہے۔ دوسری جانب صرف شانکسی صوبے میں کوئلے کے علاوہ دیگر زرایع توانائی بشمول ہوا، پی وی اوردیگر تونائی کے زریع سے صوبے کی تیس فیصد توانائی کی ضروریات کو پورا کیا جا رہا ہے۔ اس طرح سے شانکسی صوبے میں تونائی کے دیگر زرایع کے استعمال سے صوبے کو نئی ڈیویلپمنٹ ترقی و خوشحالی کے نئے زرایع سے تیزی سے ڈیویلپمینٹ کے مراحل بھی طے ہو رہے ہیں۔ شانکسی صوبے کو ماضی میں اپنی کوئلے کی پیداوار کے حوالے سے شہرت رکھتا تھا آج توانائی کے دیگر زرایع استعمال کرنے کے حوالے سے ملک میں تیزی سے اپنی پہچان بنا رہا ہے۔ شانکسی صوبہ توانائی کے انقلابی عوامل کی جانب گامزن ہے ، شانکسی میں کوئلے سے میتھین گیس کی5.6بلین کیوبک میٹر گیس اخراج تک ریکارڈ کی گئی ہیں۔ شانکسی صوبے میں ماضی کے برعکس توانائی کے دیگر زرایع سے چلنے والی گاڑیوں کے فروغ کا ایک نیا کلچر متعارف ہو چکا ہے، اس طرح سے صوبے میں مینوفیکچرنگ اورکول انڈسٹریز تیزی سے تبدیلی کی جانب گامزن ہیں دوسری جانب شانکسی صوبے صنعتی جدت پرازی اور جدید ٹیکنالوجی کے استعنال کے حوالے سے بھی تیزی سے آگے بڑھ رہا ہے، چین میں جاری گرین ڈیویلپہمینٹ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ایک برطانوی کمپنی برائے گلوبل انرجی اور کیمیکل کمپنی کے بزنس ڈیویلپمینٹ ڈائریکٹرسوٹن نے کہا کہ حالیہ چند سالوں میں شانکسی کا ماحول ماضی کے مقابلے انتہائی شفاف اور بہتر ہو اہے، اور جس طرح سے شانکسی نے اپنے ماحول کو بہتر اور شفاف بنایا ہے یہ جدوجہد انتہائی قابلِ تعریف ہے، اور میں خواہش رکھتا ہوں کہ شانکسی کے اگلے وزٹ کے موقع پر میں شانکسی کے تاریخی مقامات اور شفاف ماحول میں کچھ مزید دن گزاروں۔ دوسری جانب شانکسی نے گزشتہ چند سالوں میں سیاحت کے فروغ کے حوالے سے مجموعی طور پر گرانقدر اہداف حاصل کیئے ہیں۔ اس کیساتھ ساتھ شانکسی صوبے میں صنعتی حوالے سے بھی انقلابی اقدامات پر تیزی سے عمل درامد کیا جا رہا ہے اور ماحولیاتی تحفظ اور شہری اور دیہی سطع پر لوگوں کے معیارِ زندگی کو بہتر بنانے کے حوالے سے اقدامات پر عمل درامد یقینی بنایا جا رہا ہے۔ اور ماحولیاتی تحفظ کے حوالے سے شانکس صوبے میں 100ملین سے زائد درخت لگائے گئے ہیں تاکہ گرین ڈیویلپمنٹ کو تیزی سے فروغ حاصل ہو۔ دوسری جانب چین کی وزارتِ خارجہ کی جانب سے شانکسی صوبے میں صوبائی سطع پر بہت سے اہم تقریبات کا بھی اہتمام کیا گیا ہے تاکہ ماحولیات کیساتھ ساتھ حکومت کی جانب سے کشادگی پر مبنی پالیسز کے حوالے سے غیر ملکی مندوبین اور سفارتی حلقوں کو موثر انداز میں معلومات فراہم کی جا سکیں۔ اس حوالے سے چین کی وزارتِ خارجہ شانکسی صوبے میں جاری اقدامات کو صحیح معنوں میں اجاگر کرنے کے لیے ایک اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ اس ضمن میں شانکسی صوبے میں اصلاھات اور کشادگی پر مبنی پالیسز کے حوالے سے جو اقدامات کیے گئے ہیں انہی کو اجاگر کرنے کے لیے عالمی سطع پر شانکسی کے دنیا بھر میں 49جڑواں شہر منسوب کیئے گئے ہیں دنیا بھر کی 86آرگنائزیشنز کیساتھ اس شہر کے اشتراک کیئے گئے ہیں اس کیساتھ شانکسی صوبے سے فروری 2017میں ٹرین سروس کے اجراء سے اب تک 21کارگو ٹرین یورپ جا چکی ہیں ، جب سے چین کی اسٹیٹ کونسل کی جانب سے شانکسی صوبے کو جامع اقتصادی زون میں تبدیل کرنے کی منظوری دی ہے، تبھی سے صوبے کو ایک نئے شانکسی میں ڈھالنے کی کوششیں تیزی سے ہر شعبے میں جاری ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں